بِسمِ اللهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ

Allah, in the name of, the Most Affectionate, the Eternally Merciful

Your Questions & Comments

Don't suppress questions! Questions are good for your intellectual health!!!

آپ کے سوالات و تاثرات

سوالات کو دبائیے نہیں! سوالات  ذہنی صحت کی ضمانت ہیں!!!

Search the Website New

اردو اور عربی تحریروں کو ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے نستعلیق فانٹ یہاں سے ڈاؤن لوڈ کیجیے۔

Home

New articles and books are added this website on 1st of each month.

 

 دیت کے قرآنی حکم کی حکمت

 

Don't hesitate to share your questions and comments. They will be highly appreciated. I'll reply ASAP if I know the answer. Send at mubashirnazir100@gmail.com .

 

Religion & Ethics

Personality Development

Islamic Studies

Quranic Arabic Learning

Adventure & Tourism

Risk Management

Your Questions & Comments

Urdu & Arabic Setup

About the Founder

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

مبشر بھائی کیسے ہیں آپ؟ چند سوالات ہیں جو آپ سے پوچھنے تھے۔

سورہ البقرہ آیت ۱۷۸ میں قتل کے مقدمے کا ذکر ہے۔ قانون جو اللہ نے اس میں بیان فرمایا ہے وہ یے ہے کہ جو قاتل ہے سزا بھی اسی کو ملنی چاہیے۔ اور اگر قاتل کا بھائی اس سے نرمی اختیار کرے تو خوں بہا کا تصفیہ ہونا چاہیے۔ میرا سوال یہ ہے کہ اس طرح تو امیر انسان چاہے جتنے بھی قتل کرتا رہے اور مقتول کے خاندان والوں کو پیسے دیکر اپنی جان چھڑا لے؟ یہ قانون تو پھر دولت والوں کے لیے ہوا؟

حمیر داؤد، کراچی، پاکستان

فروری 2012

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

آپ کا سوال دیکھ کر خوشی ہوئی۔ اسٹڈیز کیسی جا رہی ہیں؟ اپنی پراگریس سے آگاہ کرتے رہا کیجیے۔

دیت سے متعلق آپ نے جوسوال بیان کیا ہے، یہ تب درست ہوتا جب دولت مندوں کو یہ حق دے دیا جاتا کہ وہ پیسہ پیش کر کے جان چھڑا لیں۔ اس کے برعکس اللہ تعالی نے یہ اختیار مقتول کے وارثین کو دیا ہے کہ وہ چاہیں تو اپنی آزادانہ مرضی سے قبول کریں اور چاہیں تو نہ کریں۔ حکومت کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ اس بات کو یقینی بنائے کہ وارثین دیت کو اپنی مرضی سے قبول کر رہے ہیں یا ان پر کوئی دباؤ ڈالا گیا ہے۔ اس آیت کریمہ میں جس بھائی کا ذکر ہے ، وہ قاتل نہیں بلکہ مقتول کا وارث ہے۔ جذبہ بیدار کرنے کے لیے آیت کریمہ میں ‘اس کا بھائی’ کا لفظ استعمال کیا گیا ہے۔ آیت کریمہ یہ ہے:

يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا كُتِبَ عَلَيْكُمْ الْقِصَاصُ فِي الْقَتْلَى الْحُرُّ بِالْحُرِّ وَالْعَبْدُ بِالْعَبْدِ وَالأُنثَى بِالأُنثَى فَمَنْ عُفِيَ لَهُ مِنْ أَخِيهِ شَيْءٌ فَاتِّبَاعٌ بِالْمَعْرُوفِ وَأَدَاءٌ إِلَيْهِ بِإِحْسَانٍ ذَلِكَ تَخْفِيفٌ مِنْ رَبِّكُمْ وَرَحْمَةٌ فَمَنْ اعْتَدَى بَعْدَ ذَلِكَ فَلَهُ عَذَابٌ أَلِيمٌ.

اے اہل ایمان! قتل کے معاملے میں آپ لوگوں پر قصاص کو فرض کر دیا گیا ہے۔  قاتل آزاد ہو تو اسی آزاد  (سے قصاص لیا جائے)، غلام ہو تو اسی غلام سے، عورت ہو تو اسی عورت سے۔ ہاں اگر، کسی شخص کو اس کا بھائی معاف کر دے، تو اس سے معروف طریقے کی پیروی کرتے ہوئے اچھے طریقے سے دیت ادا کر دینی چاہیے۔ یہ آپ لوگوں کے رب کی جانب سے ایک تخفیف اور رحمت ہے۔ اس کے بعد بھی جس نے سرکشی کی تو اس کے لے بڑا درد ناک عذاب ہے۔

دیت کی بڑی حکمتیں ہیں اور اس کی بدولت طویل دشمنیوں کو ختم کیا جا سکتا ہے، اس وجہ سے اللہ تعالی نے اپنی رحمت سے یہ اجازت عطا فرمائی ہے۔اگر یہ اجازت نہ دی جاتی تو دشمنیاں آگے چلتی جاتیں اور ایک کے بدلے دوسرا قتل ہوتا چلا جاتا۔ بعض کیسز میں ورثا کی ہمدردی مقتول کی بجائے قاتل کے ساتھ ہوتی ہے۔ جیسے ہمارے ہاں غیرت کے نام پر قتل ہیں۔ ایسی صورت میں حکومت خود مدعی بن سکتی ہے اور دیت کی بجائے قصاص کو نافذ کر سکتی ہے۔

والسلام

مبشر

مصنف کی دیگر تحریریں

تقابلی مطالعہ پروگرام /Quranic Arabic Program / Quranic Studies Program / علوم القرآن پروگرام / قرآنی عربی پروگرام  /  سفرنامہ ترکی  /    مسلم دنیا اور ذہنی، فکری اور نفسیاتی غلامی  /  اسلام میں جسمانی و ذہنی غلامی کے انسداد کی تاریخ   /  تعمیر شخصیت پروگرام  /  قرآن  اور بائبل  کے دیس میں  /  علوم الحدیث: ایک تعارف   /  کتاب الرسالہ: امام شافعی کی اصول فقہ پر پہلی کتاب کا اردو ترجمہ و تلخیص  /  اسلام اور دور حاضر کی تبدیلیاں   /  ایڈورٹائزنگ کا اخلاقی پہلو سے جائزہ    /  الحاد جدید کے مغربی اور مسلم معاشروں پر اثرات   /  اسلام اور نسلی و قومی امتیاز   /  اپنی شخصیت اور کردار کی تعمیر کیسے کی جائے؟  /  مایوسی کا علاج کیوں کر ممکن ہے؟  /  دور جدید میں دعوت دین کا طریق کار   /  اسلام کا خطرہ: محض ایک وہم یا حقیقت    /  Quranic Concept of Human Life Cycle  /  Empirical Evidence of Man’s Accountability

 

Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: Description: page hit counter