علوم الحدیث: ایک تعارف

علوم الحدیث، دینی علوم میں نہایت ہی اہمیت کے حامل ہیں۔ انہی کے ذریعے یہ علم ہوتا ہے کہ کون سی حدیث واقعتاً رسول اللہ صلی اللہ علیہ واٰلہ وسلم کی حدیث ہے اور کون سی حدیث آپ سے غلط طور پر منسوب کی گئی ہے۔ اس کتاب میں اسماء الرجال کے فن سے تفصیلی تعارف بھی موجود ہے۔ 

L0004-Hadith-Download

اگر آپ کے ذہن میں اس کتاب سے متعلق کوئی سوال ہو یا آپ اپنے تاثرات شائع کروانا چاہیں تو بلا تکلف پر ای میل کیجیے۔

mubashirnazir100@gmail.com

تعارف کورس

حصہ اول: تعارف

یونٹ 1: علوم الحدیث کا تعارف

سبق 1: تدوین حدیث کی تاریخ

History of Hadith Compilation

سبق 2: احادیث کی چھان بین کے طریقے

سبق 3: حدیث کی چھان بین اور تدوین پر جدید ذہن کے سوالات(1)

سبق 4: حدیث کی چھان بین اور تدوین پر جدید ذہن کے سوالات(2)

سبق 5: دور جدید میں حدیث کی خدمت کی کچھ نئی جہتیں

سبق 6: علوم حدیث کی اہم اور مشہور کتب

سبق 7: علم المصطلح کی بنیادی تعریفات (1)

سبق 8: علم المصطلح کی بنیادی تعریفات (2)

سبق 9: کتب حدیث کا ایک تعارف

سبق 10: مشہور محدثین کا تعارف

حصہ دوم: خبر (حدیث)

یونٹ 2: خبر کی اقسام

سبق 1: تاریخی معلومات کے حصول کے ذرائع

سبق 2: خبر متواتِر

سبق 3: خبر واحد

سبق 4: خبر مشہور

سبق 5: خبر عزیز

سبق 6: خبر غریب (اکیلے شخص کی خبر)

یونٹ 3: خبر مقبول

سبق 1: خبر واحد کی قوت (قابل اعتماد ہونے) کے اعتبار سے اس کی تقسیم

سبق 2: صحیح حدیث (1)

سبق 3: صحیح حدیث (2)

سبق 4: حسن حدیث

سبق 5: صحیح لغیرہ

سبق 6: حسن لغیرہ

سبق 7: خبر واحد جسے شواہد و قرائن کی بنیاد پر قبول کیا جائے

سبق 8: مُحکَم اور مُختَلِف حدیث

سبق 9: ناسخ اور منسوخ حدیث

یونٹ 4: خبر مردود (مسترد شدہ خبر)

سبق 1: خبر مردود اور اسے مسترد کرنے کے اسباب

سبق 2: ضعیف حدیث

سبق 3: اسقاط سند کے باعث مسترد کردہ حدیث

سبق 4: معلق حدیث

سبق 5: مُرسَل حدیث

سبق 6: مُعضَل حدیث

سبق 7: مُنقطِع حدیث

سبق 8: مُدَلّس حدیث

سبق 9: مُرسَل خفی

سبق 10: مُعََنعَن اور مُؤَنَن احادیث

سبق 11: راوی پر الزام کے باعث مردود حدیث

سبق 12: موضوع حدیث

سبق 13: متروک حدیث

سبق 14: “مُنکَر” حدیث

سبق 15: مُعَلَّل حدیث

سبق 16: نامعلوم راوی کی بیان کردہ حدیث

سبق 17: بدعتی راوی کی بیان کردہ حدیث

سبق 18: کمزور حفاظت والے راوی کی بیان کردہ حدیث

سبق 19: ثقہ راویوں کی حدیث سے اختلاف کے باعث مردود حدیث

سبق 20: مُدرَج حدیث

سبق 21: مَقلُوب حدیث

سبق 22: “المَزید فی مُتصل الاسانید” حدیث

سبق 23: “مضطرب” حدیث

سبق 24: “مُصحَّف” حدیث

سبق 25: “شاذ” اور “محفوظ” حدیث

یونٹ 5: مقبول و مردود دونوں قسم کی احادیث پر مشتمل تقسیم

سبق 1: نسبت کے اعتبار سے حدیث کی تقسیم

سبق 2: “مَرفُوع” حدیث

سبق 3: “مَوقُوف” حدیث

سبق 4: “مَقطُوع” حدیث

سبق 5: “مُسنَد” حدیث

سبق 6: “مُتَصِّل” حدیث

سبق 7: زیادات الثقات

سبق 8: اعتبار، متابع، شاھد

حصہ سوم: جرح و تعدیل

یونٹ 6: راوی اور اسے قبول کرنے کی شرائط

سبق 1: جرح و تعدیل کا تعارف

سبق 2: راوی کے قابل اعتماد ہونے کی شرائط

سبق 3: جرح و تعدیل سے متعلق چند اہم مباحث

یونٹ 7: جرح و تعدیل سے متعلق تصانیف

سبق 1: جرح و تعدیل سے متعلق تصانیف

یونٹ 8: جرح و تعدیل کے درجات لیولز

سبق 1: جرح و تعدیل کے بارہ درجات

سبق 2: تعدیل کے مراتب اور اس سے متعلق الفاظ

سبق 3: جرح کے مراتب اور اس سے متعلق الفاظ

حصہ چہارم: روایت، اس کے آداب اور اس کے ضبط کا طریق کار

یونٹ 9: ضبط روایت

سبق 1: حدیث کو حاصل، محفوظ اور روایت کرنے کا طریق کار

سبق 2: حدیث کو حاصل کرنے کے مختلف طریقے

سبق 3: کتابت حدیث اور حدیث سے متعلق تصانیف کا طریق کار

سبق 4: روایت حدیث کا طریق کار

سبق 5: غریب الحدیث

یونٹ 10: آداب روایت

سبق 1: محدث کے لئے مقرر آداب

سبق 2: حدیث کے طالب علم کے لئے مقرر آداب

حصہ پنجم: اسناد اور اس سے متعلقہ علوم

یونٹ 11: اسناد سے متعلق اہم نکات

سبق 1: عالی اور نازل اسناد

سبق 2: مسلسل

سبق 3: اکابر کی اصاغر سے حدیث کی روایت

سبق 4: باپ کا بیٹے سے حصول حدیث

سبق 5: بیٹے کا باپ سے حصول حدیث

سبق 6: مُدَبَّج اور روایت الاَقران

سبق 7: سابق اور لاحق

یونٹ 12: اسماء الرجال (راویوں کا علم)

سبق 1: صحابہ کرام

سبق 2: تابعین

سبق 3: راویوں میں رشتہ

سبق 4: متفق اور مفترق راوی

سبق 5: مُوتلِف اور مختلِف راوی

سبق 6: متشابہ راوی

سبق 7: مُہمَل راوی

سبق 8: مبُہَم راوی

سبق 9: وُحدان راوی

سبق 10: راویوں کے مختلف نام، القاب اور کنیتیں

سبق 11: راویوں کے منفرد نام، صفات اور کنیت

سبق 12: کنیت سے مشہور راویوں کے نام

سبق 13: القاب

سبق 14: اپنے والد کے علاوہ کسی اور سے منسوب راوی

سبق 15: کسی علاقے، جنگ یا پیشے سے منسوب راوی

سبق 16: راویوں سے متعلق اہم تاریخیں  (Dates)

سبق 17: حادثے کا شکار ہو جانے والے ثقہ راوی

سبق 18: علماء اور راویوں کے طبقات

سبق 19: آزاد کردہ غلام

سبق 20: ثقہ اور ضعیف راوی

سبق 21: راویوں کے ممالک اور شہر

حصہ ششم: حدیث کو پرکھنےکا درایتی معیار

یونٹ 13: درایت حدیث

سبق 1: درایت حدیث کا تعارف

سبق 2: شاذ حدیث

سبق 3: علم و عقل کے مسلمات کے خلاف حدیث

سبق 4: حدیث کا سیاق و سباق اور موقع محل

سبق 5: حدیث کو تمام متعلقہ آیات و احادیث کے ساتھ ملا کر سمجھنے کی اہمیت

سبق 6: موضوع حدیث کی پہچان

مصادر اور مراجع

(نوٹ: اس کتاب کے یونٹ 2-12 ڈاکٹر محمود طحان کی “تیسیر مصطلح الحدیث” سے ماخوذ ہیں۔)

اگر آپ کے ذہن میں اس کتاب سے متعلق کوئی سوال ہو یا آپ اپنے تاثرات شائع کروانا چاہیں تو بلا تکلف  پر ای میل کیجیے۔

mubashirnazir100@gmail.com

علوم الحدیث: ایک تعارف
Scroll to top