Slot Tergacor Situs Slot Tergacor Situs Slot Gacor Slot Gacor Slot Gacor Slot Gacor Slot Deposit Pulsa Slot Terbaru Slot Tergacor

 

 

فرشتے، جانور اور انسان

امام غزالی پانچویں صدی کے بہت بڑے عالم گزرے ہیں۔ انہوں نے تزکیہ نفس کے نقطہ نظر سے انسانی نفسیات کا گہرا مطالعہ کیا۔ اپنی کتاب ’’کیمیائے سعادت‘‘ میں انہوں نے فرشتے، جانور اور انسان کا تقابلی جائزہ پیش کیا ہے:

فرشتے، جانور اور انسان اللہ تعالیٰ کی مخلوق ہیں۔ فرشتوں کو اللہ تعالیٰ نے عقل دی ہے اور وہ ہر وقت اللہ تعالیٰ کے دربار میں حاضر رہتے ہیں ۔ اس بنا پر ان کی عقل ہمیشہ غالب رہتی ہے اور وہ کبھی اللہ تعالیٰ کی نافرمانی نہیں کرتے۔ ان کی زندگی کا ایک ایک لمحہ اللہ تعالیٰ کے احکامات کی تکمیل میں گزرتا ہے۔ وہ ہمیشہ اس کے بندے بن کر رہتے ہیں اور اس کی خلاف ورزی نہیں کرتے۔

جھگڑے کا آغاز کرنا دریا کے بند میں سوراخ کرنے کے مترادف ہے۔ اس سے پہلے کہ جھگڑا پیدا ہو، معاملے کو رفع دفع کر دو۔ سیدنا سلیمان علیہ الصلوۃ والسلام

جانوروں کو اللہ تعالیٰ نے عقل نہیں دی بلکہ خواہشات سے نوازا ہے۔ ان کی پوری زندگی خوراک کی تلاش، جنسی تسکین اور دیگر جبلی تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے گزر جاتی ہے۔ ان کے ہاں کوئی اخلاقی اصول نہیں ہوتا اور Might is Right کے اصول کے تحت بڑی مچھلی چھوٹی کو کھا جاتی ہے۔ جانوروں کی زندگی کا مقصد بھوک مٹانے، جنسی خواہش کی تکمیل اور نیند پوری کرنے کے اور کچھ نہیں ہوتا۔

ان دونوں کے مقابلے میں انسان کو اللہ تعالیٰ نے خواہشوں اور عقل دونوں سے نوازا ہے۔ انسان کا ڈائرکٹ تعلق اللہ تعالیٰ سے نہیں جس کی وجہ سے وہ ہر دم نیکی کرنے کے لئے تازہ دم ہو۔ اسے یہ اختیار دیا گیا ہے کہ وہ چاہے تو عقل کو خواہشات پر حاکم بنا لے اور چاہے تو خواہشات کا غلام بن کر زندگی بسر کرے۔ یہ حقیقت ہے کہ اگر انسان عقل کو خواہشات پر غالب کرلے تو اللہ تعالیٰ کے ہاں اس کا مقام فرشتوں سے بھی بلند ہو جاتا ہے اور اگر اس کی خواہشات، عقل پر حکمرانی کرنے لگیں تو اس کا درجہ جانوروں سے بھی بدتر ہو جاتا ہے۔ جانور تو اللہ کی سزا سے بچ جائیں گے لیکن انسان اس سے بچ نہیں سکتا۔ اللہ تعالیٰ کی جیسی جنت انسانوں کو میسر ہوگی ویسی فرشتوں کو نہ ہو سکے گی۔ ہمیں اپنا جائزہ لینا چاہیئے کہ ہماری زندگی کیسی گزر رہی ہے۔

(مصنف: محمد مبشر نذیر)

دور جدید میں دعوت دین کا طریق کار۔ یہ تحریر دعوت دین کی اہمیت، دین کا کام کرنے والوں کی شخصیت، دعوت دین کی منصوبہ بندی اور دعوتی پیغام کی تیاری کے عملی طریق ہائے کار کی وضاحت کرتی ہے۔ ان افراد کے لئے مفید جو کہ دعوت دین میں دلچسپی رکھتے ہوں۔

اس تحریر سے متعلق آپ کے تجربات دوسروں کی زندگی سنوار سکتے ہیں۔ اپنے تجربات شیئر کرنے کے لئے ای میل بھیجیے۔ اگر آپ کو تعمیر شخصیت سے متعلق کوئی مسئلہ درپیش ہو تو بلاتکلف ای میل کیجیے۔ mubashirnazir100@gmail.com

غور فرمائیے

  • · فرشتے، جانور اور انسان میں بنیادی فرق کیا ہے؟
  • · انسان کی اصل فضیلت کیا ہے؟

اپنے جوابات بذریعہ ای میل اردو یا انگریزی میں ارسال فرمائیے تاکہ انہیں اس ویب پیج پر شائع کیا جا سکے۔